وہ دیکھے گا بھی ادھر اور اشارا بھی ہوگا

Poet: Asad
By: Asad, mpk

دل کے دریا کا کوئی کنارا بھی ہوگا
ڈوبنے والے کے لیئے سہارا بھی ہوگا

ایک سے مسائل سے دوچار ہیں ھم تم
ایک ہی منزل ھے جب تو چارہ بھی ہوگا

کیوں لائیں ماتھے پر کوئی شکن اپنے
اگر دل ٹوٹا تو نقصان تمہارا بھی ہو گا

آج نہیں تو کل یہ ہو کر رہنا ھے کبھی
وہ دغا دے گا تمہیں جو پیارا بھی ہو گا

ھم یوں ہی کھڑے نہیں اسد سامنے انکے
وہ دیکھے گا بھی ادھر اور اشارا بھی ہوگا

Rate it:
04 Oct, 2019

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Asad
Visit 357 Other Poetries by Asad »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City