کہاں تلاش کروں اس کو آج میں وشم

Poet: وشمہ خان وشمہ
By: وشمہ خان وشمہ, منیلا

کتاب دل میں جو نفرت کا باب رکھتا تھا
وہ چاہتوں کا مکمل حساب رکھتا تھا

فریب ریتا رہا دوستی کے پردوں میں
وہ شخص چہرے پہ کتنے نقاب رکھتا تھا

اس کے ہاتھوں میں پتھر دکھائی دیتا ہے
جو اپنے ہاتھ میں ہر دم گلاب ر کھتا تھا

وہ شخص جو کہ بھٹکتا دکھائی دیتا ہے
راہِ وفا میں قدم کامیاب رکھتا تھا

کہاں تلاش کروں اس کو آج میں وشمہ
جو اپنی بات میں اپنا جواب رکھتا تھا

Rate it:
21 Sep, 2020

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: washma khan washma
I am honest loyal.. View More
Visit 4593 Other Poetries by washma khan washma »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City