ہونٹوں سے تر ہونے دو

Poet: شفق
By: Shafaq, Lahore

ہو جاو میرے اور خود کو مجھے سونپ دو
بس جاو میری دھڑکنوں میں
اور میرے احساس کو پڑھ لو
سمجھو میرے جذبات کو
اور ان میں بہہ جانے دو
بنا لو اپنی ضرورت مجھے
میری عادت خود کو بننے دو
آنکھوں سے چڑھنے دو
نشہ اپنے پیار کا
ہونٹوں سے تر ہونے دو
دھوپ ہے تنہائی کی مجھ پر
کرو محبت کا سایہ
اب اس دھوپ کو مدھم ہونے دو
ہو گئی تھی شام طویل تیرے انتظار کی
بکھرو اب چاندنی اپنی چاہت کی
اور مجھے اپنی گود میں سونے دو

Rate it:
28 Feb, 2020

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Shafaq
Visit 61 Other Poetries by Shafaq »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City