یادیں

Poet: ضیاء الرحمٰن
By: Zia Ur Rehman, Haripur kpk

تیرے ملنےکاتصور ہے ایساجیسے
چاند ملنے کو مجھے شام کو آۓ

تیری یاد ایسی ہے گماں میں میرے
جیسے گل کو گزری ہوئی بہار کی آۓ

یارب! جاناں سے ملاقات ہو کیسے
کوئی تو ترقیب میرے دھیان میں آۓ

دل میں.بےچینیوں کا طوفان ہے پرجوش
جیسا شدت سے کسی ریگستان میں آۓ

کسی امتحان سے لوٹ کے آنے والا
یہ ضروری تو نہیں ہے کے ہار کے آۓ

گنوائی جب عمر میں نے تو ہوش آیا
جیسے کافر کو یادِ خدا بعد از حیات آۓ

چلے جاتے ہیں خود ہی ضیاء بہار کی جانب
یہ ضروری تو نہیں ہے ہر بار بہار آۓ

Rate it:
02 Nov, 2019

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Zia Ur Rehman
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City