آنکھوں کو سمجھاؤں گا کہ تمہیں نہ دیکھیں

Poet: Muhammad Idrees Primi
By: Abdul Qadir, Lahore

 آنکھوں کو سمجھاؤں گا کہ تمہیں نہ دیکھیں
معاف کرنا اگر مل جائے نظر سے نظر
-------------------------------------------------
گر کوئی جینے نہ دے شرافت سے
پھر مسلمانوں تم جینا سیکھو طاقت سے
--------------------------------------------------
تم اپنے گھر آباد رہو ہم ویراں اپنے ویرانے میں
کوئی کسی کی سنتا نہیں نفسا نفسی کے زمانے میں
---------------------------------------------------------
میں نے کچھ مانگا نہیں اس نے کچھ دیا نہیں
یہ ہماری فطرت مانگ کر کچھ لیا نہیں
---------------------------------------------------------
تیرے سپنے پورے ہوئے لیکن مجھے تعبیر نہ ملی
ہر کوئی لگا ہے اپنا اپنا گھر بسانے میں
-----------------------------------------------------
جسے یار سمجھتا رہا پتا چلا کہ وہ سب کا یار ہے
ہر کسی سے وفا کرتا ہے وہ بہت وفادار ہے
 

Rate it:
30 Oct, 2019

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Abdul Qadir
Visit Other Poetries by Abdul Qadir »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City