اقرار نہیں کر سکتا

Poet: Eisha-Tul-Razia(مسافر)
By: Eisha-Tul-Razia, GUJRAT

یار میں اس لیے اقرار نہیں کر سکتا
میں اسے, اس جیسا پیار نہیں کر سکتا

سہے گا کیسے غم ترک وفا اس عمرمیں وہ
بس یہی سوچ کہ میں انکار نہیں کر سکتا

پوچھ لیتا وہ مجھے کاش وفا سے پہلے
اور میں کہتا کہ خبردار نہیں کر سکتا

دل جس کا مجسمہ ہے.. پارسائی کا
میں ایسے شخص کو گنہگار نہیں کر سکتا

میں تو خود عشق حقیقی کا طالب ہوں
میں اسے اپنا طلبگار نہیں کر سکتا

بہت مشکل ہے مسافر یہ محبت کی سبیل
میں اسے ایسے یہاں خوار نہیں کر سکتا

Rate it:
06 Apr, 2020

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Eisha-Tul-Razia
Visit Other Poetries by Eisha-Tul-Razia »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City