فقط محبت کرے نہ مجھ سے محض پیار بھی دے

Poet: Asif shaaki
By: Asif Shaaki, Karachi

وہ دل کی تڑ پ کے ساتھ ساتھ دل بے قرار بھی دے
فقط محبت کرے نہ مجھ سے محض پیار بھی دے

صرف چمن،خوشبو،معطر ہوا و فضا گل و غنچہ
بہار کی علامت سمیت دل کا موسم خوشگوار بھی دے

دل گھبراہٹ کا ہے شکار کہ اس سے فراق نہ ہو جائیے
روز ایسے مرنے سے بہتر ہے کہ وہ مجھے مار ہی دے

تیری محبت بوجھ ہے قرض ہے احسان ہے یا ایثار
جو کچھ بھی ہی وللہ اسے میرے دل سے اتار بھی دے

اس سے فقط اتنا گِلہ کہ مجھے بڑی دیر سے ہے ملا شاکی
شاید کوئی دیوانہ خوشی یا خوف ہجر میں اپنی زندگی ہار بھی دے

Rate it:
11 Mar, 2020

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Asif Shaaki
Visit 18 Other Poetries by Asif Shaaki »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City