وقت رخصت وہ ہاں میں ہاں ملا کر گیا

Poet: Sajid Bin Zubair
By: Sajid Bin Zubair, Bahawalnagar

وقت رخصت وہ ہاں میں ہاں ملا کر گیا
جانے والا دل کی باتیں وہ مجھ کو بتا کر گیا

میرا ہو گا وہ اک دن یہی مجھ سے وعدہ کئیے
امیدوں کے دئیے وہ مجھ میں جلا کر گیا

بڑی دشوار ہیں راہیں محبت کے جزیروں میں
زوال محبت کی ہر نشانی وہ مجھ کو بتا کر گیا

مقام انتہا پر بے بسی کے عالم میں
اشکوں کے موتی وہ میرے دامن میں گرا کر گیا

وہ چاہتا تو سینے سے لگا سکتا تھا مجھ کو
ہائے کہ وہ شخص آداب محبت مجھ کو سکھا کر گیا

الفتوں کے آشیانوں سے کبھی راحتیں نہیں ملتی
شمع پہ جلتے کئی پروانے وہ مجھ کو دکھا کر گیا

عشق کے سمندر میں کسی کو تہرنا نہیں آیا
ابھرتی لہروں میں کتنے بھنور وہ مجھ کو دکھا کر گیا

بھٹک نہ جائے ساجد کہیں پر کیف نظاروں میں
اپنے آنچل کی ٹھنڈی ہوا میں وہ مجھ کو سلا کر گیا

Rate it:
20 Aug, 2020

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Sajid Bin Zubair
Visit 6 Other Poetries by Sajid Bin Zubair »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Nice one

By: Saqlain , Attock on Aug, 26 2020

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City