بوسنیا نے جنگ آزادی کے بعد پہلی مرتبہ اپنی فضائی حدود کا مکمل کنٹرول سنبھال لیا

1990 کی دہائی کی جنگ آزادی کے بعد بین الاقوامی امن افواج کے زیر نگرانی ہونے کے بعد بوسنیا نے پہلی بار جمعرات سے اپنے فضائیہ کا مکمل کنٹرول حاصل کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق بوسنیا  اپنی جنگ آزادی کےبعد پہلی مرتبہ آج اپنی فضائی حدود کا مکمل  کنٹرول سنبھال لے گا، جنگ کے بعد بین الاقوامی امن  فورسز فضائی حدود کی نگران تھیں۔

نیٹو کی زیرقیادت امن فوج نے 1995 سے 2003 تک اس کے فضائی خلا پر قابو پالیا تھا،  جب اسے پڑوسی ملک سربیا اور کروشیا منتقل کیا گیا تھا ، جبکہ بوسنیا نے اپنے نظام کو تشکیل دے کر جدید بنایا تھا۔

بوسنیا کی ایئر  نیویگیشن کے سربراہ ڈوورین پریمارک نے کہا ، “یہ پہلا موقع ہے جب بوسنیا نے اپنی فضائی جگہ کا کنٹرول سنبھال لیا ہے اور یہ ایک بہت بڑی کامیابی ہے۔

بوسنیا نے اپنے ہوائی نیویگیشن مینجمنٹ سسٹم کے قیام کے لئے 10 سالہ منصوبے اور 400 عملے کی تربیت کے بعد 2014 میں 10،000 میٹر (33،000 فٹ) سے نیچے کی فضائی جگہ پر کنٹرول حاصل کرلیا۔ سربیا اور کروشیا نے 10،000 میٹر سے بلندی پر اپنا کنٹرول برقرار رکھا ،  جب پرانے یوگوسلاو فیڈریشن میں تینوں ممالک جمہوریہ کے اتحادی تھے۔

پریمارک نے کہا کہ بوسنیا کو اپنی فضائی جگہ پر قابض ہونے میں کئی دہائیاں لگ گئیں کیونکہ اس کی 1992-95 کی جنگ ، جو یوگوسلاویہ سے علیحدگی کے نتیجے میں ہوئی تھی ، نے بڑے انفراسٹرکچر اور سازو سامان کو تباہ کیا تھا اور اسے ہنر مند کارکنوں کی کمی چھوڑ دی تھی۔

انہوں نے کہا کہ فلائٹ کنٹرولرز کو تربیت دینے ، انفراسٹرکچر کی تعمیر نو اور ریڈار سسٹم سمیت ضروری سامان حاصل کرنے میں کافی وقت درکار ہے۔

پریمارک نے مزید کہا کہ بوسنیا کے فلائٹ کنٹرولرز ایک دن میں 1،600 پروازوں کی نگرانی کریں گے، جو پہلے کے مقابلے میں آٹھ گنا زیادہ ہیں۔

واضح رہے کہ  بوسنیا نے اپنے نسلی سرب ، کریٹ اور مسلم کمیونٹیز کے مابین 1992-95 کی تباہ کن جنگ کے بعد سے تعمیر نو کے لئے جدوجہد کی ہے۔


 

WATCH LIVE NEWS

Samaa News TV PTV News Live Express News Live 92 NEWS HD LIVE Pakistan TV Channels

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.