27 ارب کے لگائے گئے نئے ٹیکسز کو مسترد کرتے ہیں،اجمل بلوچ

image

صدر آل پاکستان انجمن تاجران اجمل بلوچ  نے 27 ارب کے لگائے گئے نئے ٹیکسز کو مسترد کر دیا۔

اپنے بیان میں انہوں نے کہا کہ وزیر خزانہ کا وعدہ تھا کہ اسٹیک ہولڈرز کی مشاورت کے بغیر نیا ٹیکس نہیں لگائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ پہلے فکس سیل ٹیکس لگا کر تاجر برادری کو ایک ماہ خوار کیا گیا، اسٹیک ہولڈرز کے ساتھ بیٹھے بغیر لگایا گیا نیا ٹیکس قابل قبول نہیں۔

خیال رہے کہ وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے اعلان کیا ہے کہ 26 ارب روپے کے نئے ٹیکس لگا رہے ہیں جبکہ لگژری اشیا کی درآمدات پر پابندی ختم کی جا رہی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ عالمی مالیاتی ادارے (آئی ایم ایف) کی جتنی شرائط تھیں ہم نے پوری کردی ہیں۔ چین اور دیگر دوست ممالک نے بہت تعاون کیا۔

انہوں ںے کہا کہ درآمدات ہمارے کنٹرول میں ہے تاہم ہم نے اس پر جو پابندی عائد کی تھی وہ اب ختم کر رہے ہیں اور آئی ایم ایف بھی چاہتا ہے کہ ہم درآمدات پر جلدی پابندی ہٹا لیں۔

مفتاح اسماعیل نے کہا کہ ہم گندم، کاٹن اور دیگر اناج درآمد کرتے ہیں جبکہ وزیر اعظم کی ذمہ داری ہے کہ پوری قوم کے لیے اناج مہیا کریں۔ ہمارے پاس محدود ڈالرز ہوں تو ہم یہ ذمہ داری پوری کرتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ بین الاقوامی تقاضے پورے کرنے کے لیے درآمدات سے پابندی ہٹانا ضروری ہے تاہم بڑی گاڑیوں پر ڈیوٹیز لگائیں گے لیکن پہلے آٹے چینی دال کو ترجیح دیں گے۔ درآمدات پر پابندی ہٹانے کے بعد کسٹم ڈیوٹیز کا سامنا کرنا ہو گا۔

یہ بھی پڑھیں: 

وزیر خزانہ نے کہا کہ کچھ لگژری آئٹمز پر ڈیوٹیز لگا دیں گے۔ بجلی پر سبسڈی دیں گے اس کی ہم فنڈنگ کر رہے ہیں۔ ہم 42 ارب کا ہدف پورا نہیں کر سکے جبکہ ری وائز ہدف 27 ارب روپے کا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ریٹیل ٹیکس ہٹا دیا جائے گا اور انکم ٹیکس رہے گا جبکہ یکم اکتوبر سے سیلز اور انکم ٹیکس یونٹس بڑھنے پر بڑھتا رہے گا۔ 15 بلین گیپ کو پورا کرنے کے لیے 15 ارب سے زیادہ کا ٹیکس لگایا ہے اور 26 ارب روپے کا مزید ٹیکس لگا رہے ہیں۔ سگریٹ پر بھی ٹیکس لگا رہے ہیں لیکن بہت ساری اشیا پر ٹیکس مؤخر کر دیا۔


News Source   News Source Text

مزید خبریں
تازہ ترین خبریں
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.