اس کے ہونٹوں پر

Poet: شفق
By: Shafaq, Lahore

ہاتھوں کی لکیروں میں
کوئی تو اس کے نام کی ہوتی
میری بھی سحر
اس کی شام سے جوان ہوتی
وہی ہوتا غرور میرا
میری بھی کبھی اس کے نام سے پہچان ہوتی
اس کے ہونٹوں پر کبھی
میرا بھی نام ہوتا
آنکھوں میں بھی اسکی
میری تصویر ہوتی
بیٹتھا جو شام کو
ہر فکر سے آزاد ہو کر
ایک پیالی چائے کی میری بھی ساتھ ہوتی
آنکھوں میں اس کی جو خواب ہوتے
ان خوابوں کی تعبیر
میرے ساتھ میں ہوتی

Rate it:
21 May, 2020

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Shafaq
Visit 63 Other Poetries by Shafaq »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City