اپنے صاحب کو میں پھر آج سلامی کرلوں

Poet: وشمہ خان وشمہ
By: وشمہ خان وشمہ, ملائیشیا

چشمِ گریاں کی روانی ہے مری آنکھوں میں
کس محبت کی کہانی ہے مری آنکھوں میں

جس پر اترا ہے کئی بار سمندر صاحب
پھر سے وہ شام سہانی ہے مری آنکھوں میں

اپنے صاحب کو میں پھر آج سلامی کرلوں
اس کی اک یاد پرانی ہے مری آنکھوں میں

تیرے ہاتھوں میں ہوں صدیوں کے مسافر پڑھ لے
ایک الجھی سی کہانی ہے مری آنکھوں میں

آج بھی تیری محبت کی امانت ہے سب
جو مرا حسن" ،جوانی مری آنکھوں میں

زورِ طوفان سے پھر ٹوٹ نہ جائے اک دن
یہ جو اشکوں کی روانی ہے مری آنکھوں میں

یہ جو ٹوٹا ہے سمندر کا کنارہ وشمہ
یہ تو چاہت کی نشانی ہے مری آنکھوں میں

Rate it:
27 Oct, 2015

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS
About the Author: وشمہ خان وشمہ
I am honest loyal.. View More
Visit 4712 Other Poetries by وشمہ خان وشمہ »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City