اک عاشق پرندہ

Poet: Eisha-Tul-Razia(مسافر)
By: Eisha-Tul-Razia, GUJRAT

میں اک عاشق پرندہ ہوں کبھی تو اڑ ہی جاؤں گا
خود کو دنیا کی نظروں سے کہیں دور لے جاؤں گا

فقیری میں میرے مالک میں ایسے ڈوب جاؤں گا
درد ہزاروں بھی ہوں مجھکومیں تبّھی مسکراؤں گا

کبھی ویرانیاں دل کی یونہی بڑھنے لگیں گر تو
شدتِ عشق سے ھُو میں _ بس مجذوب ہو جاؤں گا

کبھی جو وقت کے ہاتھوں زمین پر پتخ دیا جاؤں
فقط تیرے ہی آگے تب بھی میں سر جھکاوں گا

بھلے محروم رہوں تا عمر ،جہاں کی ہر آسائش سے
یہ دامن میں صدا پھر بھی ، تیرے در پر پھیلاوں گا

بخدا اک مسافر ہوں ، یہاں بھیجا گیا ہوں میں
میں آدم زاد ہوں پر اجداد کی غلطی نہ دہراؤں گا

میں مسافر، سفر میرا فقط خود سے خدا تک ہے
بھلے دشوار ہو.... لیکن ، میں رستے خود بناؤں گا

Rate it:
03 Apr, 2020

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Eisha-Tul-Razia
Visit Other Poetries by Eisha-Tul-Razia »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City