وہ دن نہ رہے وہ راتیں نہ رہیں

Poet: احسن فیاض
By: Ahsin Fayaz, Badin

وہ دن نہ رہے وہ راتیں نہ رہیں وہ ہم بھی نہ رہے
احسن اب کی بار یوں ہوا کے دہلیز پے اپنی غم بھی نہ رہے

کس در سے پائیں اب روز ہجر سے نجات
اس نگری میں احسن اپنے تو ہمدم بھی نہ رہے

کیا ہوتا گر ختم حیات کے دن کچھ کم رہہ جاتے
ھائے احسن بدنصیبی یہ کے دن کم بھی نہ رہے

سبھی رونقیں چھین گیا وہ شخص میری آنکھوں سے
کے بے بسی کا یہ عالم احسن آنکھ نم بھی نہ رہے

ازالا دیا کسی کی وفا کا یوں بھی ہم نے
اپنے آپ پے احسن اپنی ذات کے کرم بھی نہ رہے

مانا کے بہشت کا حقدار نہیں ہوں احسن
مگر بندہ دیگری نہیں جو جہنم بھی نہ رہے

Rate it:
26 Aug, 2019

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Ahsin Fayaz
Visit 31 Other Poetries by Ahsin Fayaz »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City