پاکستان کی 75فیصد بالغ آبادی اسلامی بینکاری کے نظام سے استفادہ کی خواہشمند ہے

پاکستان کی 75فیصد بالغ آبادی اسلامی بینکاری کے نظام سے استفادہ کی خواہشمند ہے۔ا سٹیٹ بینک آف پاکستان اور برطانیہ کے بین الاقوامی ترقی کے ادارے (ڈی ایف آئی ڈی) کے باہمی اشتراک سے کی گئی اسٹڈی رپورٹ کے مطابق ملک میں بالغ افراد کی کثیر تعداد روایتی بینکاری کی بجائے اسلامی بینکاری کو ترجیح دیتی ہے اور 75فیصد بالغ افراد اسلامی بینکنگ کی سہولیات سے استفادہ چاہتے ہیں جبکہ ملک میں بینکاری کی سہولیات سے استفادہ نہ کرنے والوں کی مجموعی آبادی کا تقریبا 93فیصد حصہ روایتی بینکاری کو اسلامی اقدار اور قوانین کے خلاف سمجھتی ہے کیونکہ اسلام میں سود کو حرام قرار دیا گیا ہے یہی وجہ ہے کہ وہ روایتی بینکاری کی سہولیات سے گریزاں ہیں۔رپورٹ کے مطابق پاکستان نے نیشنل فنانشل انکلوژن اسٹریٹیجی (این ایف آئی ایس)کے سال 2020 کے اختتام تک 50فیصد بالغ افراد کو بینکاری سہولیات کی فراہمی کا ہدف مقرر کیا ہے ۔ جس کا بنیادی مقصد مالیات تک آسان رسائی اور بچتوں کے ذریعے چھوٹے اور درمیانے درجے کے کاروباری اداروں کے شعبہ(ایس ایم ای)کو ترقی دی جا سکے ۔ ایس ایم ایز کے شعبہ کی ترقی سے ملک میں کاروباری ، تجارتی اور صنعتی سرگرمیوں کے فروغ سے معاشی استحکام کے مطلوبہ اہداف کے حصول میں معاونت ہوگی اور بے روز گاری کی شرح کو بھی کم کیا جا سکے گا۔اسلامی بینکاری کے ماہرین نے کہا ہے کہ اسلامی بینکنگ کے شعبہ میں ترقی کے وسیع امکانات موجود ہیں کیونکہ ملک کی بالغ آبادی کی ایک کثبر تعداد روایتی بینکاری کی بجائے اسلامی بینکاری سے استفادہ کی خواہشمند ہے ۔ انہوں نے کہا کہ حالیہ چند سال کے دوران اسلامی بینکاری سے مستفید ہونے والوں کی تعداد میں نمایاں اضافہ ہو رہا ہے ۔


 

WATCH LIVE NEWS

Samaa News TV PTV News Live Express News Live 92 NEWS HD LIVE Pakistan TV Channels

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.