عمران فاروق کیس،ہائیکورٹ کی ڈپٹی اٹارنی جنرل کوپیرتک دلائل مکمل کرنےکی ہدایت

image

ڈاکٹرعمران فاروق قتل کیس میں اسلام آباد ہائی کورٹ نے ڈپٹی اٹارنی جنرل خواجہ امتیازکو ہدایت کی ہے کہ پیر تک اپنے دلائل مکمل کرلیں تاکہ اس معاملے کوجلد ختم کریں۔

جمعرات کو اسلام آباد ہائی کورٹ میں ڈاکٹرعمران فاروق قتل کیس میں سزا کے خلاف ملزمان کی اپیلوں پر سماعت ہوئی۔ چیف جسٹس اطہر من اللہ اور جسٹس عامر فاروق نے کیس کی سماعت کی۔

ڈپٹی اٹارنی جنرل خواجہ امتیاز عدالت میں پیش ہوئے۔عدالت نے ڈپٹی اٹارنی جنرل کو پیر تک دلائل مکمل کرنے کی ہدایت کردی۔ڈپٹی اٹارنی جنرل نے عدالت کو بتایا کہ ملزمان کے نام بنکوں میں اکاؤنٹس کھولے گئے اور عدالت کے سامنے بنکوں کے اکاؤنٹس کی تفصیلات پیش کرنا چاہتا ہوں۔

ڈپٹی اٹارنی جنرل نے بتایا کہ اس مقصد کے لیے برطانیہ  رقم بھیجی گئی اور وہاں کے بینک میں اکاؤنٹ کھولے گئے۔ انھوں نے بتایا کہ مجرم معظم کے نام پراکاؤنٹس کھول کر اس میں  فنڈز جاری کیے گئے اور اس میں  ایک بڑی کمپنی کا نام ہے جبکہ فنڈز کاشف نامی شخص کے نام بھی گئے۔

ڈپٹی اٹارنی جنرل نے مزید تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ 25 لاکھ روپے معظم کے اکاؤنٹس میں گئے اور ملزمان کی ٹریول ہسٹری بھی موجود ہے۔ یکم اگست کو اکاؤنٹس سے 17  لاکھ روپے نکالے گئے۔ انھوں نے یہ بھی بتایا کہ ملزمان کا بیرون ملک جانے کا مقصد یہ قتل ہی تھا اور ان کا پڑھائی سے کوئی تعلق نہیں تھا۔

انھوں نے بتایا کہ ملزمان نے اکاؤنٹس سے پیسے نکلواتے ہی اپنا کام کردیا اورہمارے پاس چارٹ موجود ہے جس میں تمام تفصیلات موجود ہیں۔ اس کیس کے ملزمان کا چھ بار چار اورچار دن کا تفتیشی افسر نے ریمانڈ لیا۔ اسلام آباد ہائی کورٹ نے اس کیس کی سماعت پیر تک ملتوی کردی۔

پس منظر:۔کیس کے ملزمان معظم علی،خالد شمیم اور محسن علی نے سزا کے خلاف اپیلیں دائر کر رکھی ہیں۔ ملزمان کی جانب سے اے ٹی سی کا 18  جون 2020 کا فیصلہ کالعدم قرار دینے کی استدعا کی گئی ہے۔ ملزمان کی جانب سے پچھلے برس سزا کے خلاف اپیلیں دائر کی گئی تھیں۔

عمران فاروق قتل کیس،ملزمان کوعمرقیدکی سزاسنادی گئیواضح رہے کہ خصوصی عدالت نےقتل کیس میں خالد شمیم،معظم اور محسن کو عمر قید کی سزا سنائی تھی۔فیصلے میں عدالت نے ریمارکس دئیےکہ استغاثہ نےاپنا کیس ثابت کردیا ہے،ملزمان نے مادر وطن کا نام پوری دنیا میں بدنام کیا مثالی سزا کے مستحق ہیں،سزائے موت کے لئے یہ بہترین کیس ہے لیکن ترمیمی آرڈیننس کے بعد بیرون ملک سے حاصل شواہد پر سزائے موت دے نہیں سکتے۔ قتل کی سازش اورمعاونت پر بانی متحدہ سمیت 4افراد کے وارنٹ گرفتاری بھی جاری کیے جاچکے ہیں۔

عمران فاروق کیس،ملزمان کی سزا کيخلاف اپیلیں سماعت کیلئے مقررچودہ جون 1960 کو کراچی میں پیدا ہونے والےایم کیوایم رہنماء عمران فاروق کا 16ستمبر 2010 میں لندن کےعلاقے ایجوائر میں قتل ہوا تھا۔ ان کا شمار ایم کیوایم کے سرکردہ رہنماء اور آل پاکستان مہاجراسٹوڈنٹ آرگنائزیشن کے بانیوں میں سے ہوتا تھا۔


News Source   News Source Text

WATCH LIVE NEWS

مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.