فکر ہجر نےکس کے اشارے

Poet: وشمہ خان وشمہ
By: وشمہ خان وشمہ, Kuala Lampur

فکرِ ہجر نے کس کے اشارے پہ لکھ دیا
قسمت کا کھیل اپنے ستارے پہ لکھ دیا

یہ دیکھ کر کہ رات سے دریا اداس ہے
لہروں نے میرا نام کنارے پہ لکھ دیا

دشمن بھی لوٹ آئے مجھے پھر خریدنے
میں نے جو خود کو آج خسارے پہ لکھ دیا

ہر کوئی پڑھ رہا ہے مرا حالِ دل یہاں
کیا کیا یہ زندگی کے شمارے پہ لکھ دیا

پھر تُو بھی ڈھونڈے گا مرے نام و نشان کو
اینٹوں کے درمیان جو گارے پہ لکھ دیا

وشمہ خلوص و پیار کا عالم تو دیکھئے
بچوں نے میرا نام غبارے پہ کھ دیا

Rate it:
10 Feb, 2020

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: washma khan washma
I am honest loyal.. View More
Visit 4549 Other Poetries by washma khan washma »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City