فٹبال ریفری شِپ میں مردوں کی اجارہ داری کو چیلنج کرنے والی سعودی خاتون

فٹبال کے کھیل کی دیوانی سعودی خاتون شام الغامدی کا کہنا ہے کہ وہ میچ ریفری کے شعبے میں بین الاقوامی لائسنس حاصل کرنے کے لیے کوشاں ہیں تا کہ وہ فٹبال کی ریفری شپ کو بطور پیشہ اپنانے والی پہلی سعودی خاتون بن جائیں۔

پیر کے روز SBC چینل پر نشر ہونے والے ایک پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے شام نے بتایا کہ وہ بچپن سے ہی فٹبال کے کھیل سے بے پناہ لگاؤ رکھتی ہیں۔ بڑے ہونے کے بعد اُن کے کانوں کو یہ جملے سننے پڑتے تھے کہ لڑکیوں کو فٹبال کی کوئی سمجھ نہیں ہوتی، یہ الفاظ شام کو اشتعال دلاتے تھے۔

شام کے مطابق انہیں ایسی لڑکیوں کے بارے میں آگاہی ملی جو خود فٹبال کے کھیل کی دیوانی تھیں۔ اس کے بعد شام نے فیصلہ کیا کہ وہ مملکت میں اس کھیل کے حوالے سے خواتین کی صلاحیتوں کو منوا کر ہی دم لیں گی۔

سعودی خاتون ریفری نے بتایا کہ ابتدا میں انہوں نے ذاتی طور پر ریفری شپ کے قوانین اور کھیل سے متعلق اصول و ضوابط کی آگاہی حاصل کی۔ اس سلسلے میں شام کو سابق بین الاقوامی ریفری مرعی العواجی کی جانب سے مدد حاصل ملی۔ بعد ازاں انہیں سعودی فٹبال فیڈریشن کی جانب سے دعوت ملی کہ وہ فٹبال کی بین الاقوامی فیڈریشن "فیفا" کی جانب سے ریفریز کے لیے منعقد کرائے جانے والے تربیتی کورس میں شریک ہوں۔

ریفری شپ کے میدان میں شام الغامدی نے سابق سعودی ریفری محمد فودہ کو اپنا رول ماڈل قرار دیا۔ شام کے مطابق فودہ اپنے شعبے میں ایک روشن ستارے کی طرح چمکتے ہیں اور وہ میچوں میں فودہ کے فیصلوں اور تجزیوں سے بھرپور طریقے سے لطف اندوز ہوتی ہیں۔


 

WATCH LIVE NEWS

Samaa News TV PTV News Live Express News Live 92 NEWS HD LIVE Pakistan TV Channels

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.