بانجھ خاتون سائنس کی مدد سے ماں بن گئیں

بانجھ خاتون سائنس کی مدد سے ماں بن گئیں۔

تفصیلات کے مطابق امریکہ کے شہر فلاڈیلفیا میں رہنے والی خاتون جینیفر پیدائشی طور پر بانجھ تھیں یعنی بچہ پیدا کرنے کی صلاحیت سے محروم تھیں۔

خیال رہے کہ ایک جینیاتی نقص کی وجہ سے جینیفر بچہ دانی یعنی یوٹرس کے بغیر پیدا ہوئیں اس وجہ سے انہیں یہ یقین تھا کہ وہ کبھی ماں نہیں بن پائیں گی۔

سنہ 2018 میں ان کے جسم میں ایک حال ہی میں وفات پانے والی جوان خاتون کے جسم سے نکالی گئی یوٹرس ٹرانسپلانٹ کی گئی جو مرنے والی خاتون نے اپنی زندگی میں ہی عطیہ کر رکھی تھی۔

اس ٹرانسپلانٹ کے بعد جینیفر نہ صرف کامیابی سے حاملہ ہوئیں بلکہ انہوں نے چند دن پہلے ایک فل ٹرم بچے کو جنم دیا ہے

جینیفر ایک جینیاتی ڈیفیکٹ کے ساتھ پیدا ہوئیں جسے Mayer-Rokitansky-Kuster-Hauser syndrome کہا جاتا ہے اور جو اوسطاً ساڑھے چار ہزار خواتین میں سے صرف ایک میں پایا جاتا ہے-

انہیں سترہ سال کی عمر میں ہی علم ہو گیا تھا کہ وہ زندگی بھر کبھی ماں نہیں بن پائیں گی-تاہم اب 33 سال کی عمر میں ان کا ماں بننے کا خواب جدید ٹیکنالوجی کی مدد سے پورا ہو گیا ہے-اگرچہ اس سے پہلے بھی ایک بچہ عطیہ شدہ یوٹرس کی مدد سے پیدا ہو چکا ہے لیکن اس نئے تجربے میں ایک مردہ خاتون کا عطیہ کردہ یوٹرس جینیفر کے جسم میں نصب کیا گیا-اس سے پہلے کسی مردہ خاتون کا یوٹرس کامیابی کے ساتھ ٹرانسپلانٹ نہیں کیا گیا تھا-اس ٹرانسپلانٹ کے بعد جینیفر اور ان کے شوہر نے ایک فرٹیلیٹی کلینک سے رابطہ کیا جہاں اس جوڑے نے پہلے سے اپنا ایمبریو برف خانے میں محفوظ کروا رکھا تھا-اس ایمبریو کو جینیفر کے نئے یوٹرس میں امپلانٹ کیا گیا جس سے اس بچے کی پیدائش ممکن ہوئی۔یادرہے کہ اس کے علاوہ بہت کم خواتین اپنی زندگی میں یوٹرس کا عطیہ دینے کے لیے تیار ہوتی ہیں کیونکہ ایسا کرنے کے بعد وہ خود کبھی ماں نہیں بن پاتیں۔جینیفر کے ڈاکٹر کے مطابق اس کامیاب تجربے سے بہت سی بانجھ خواتین کے لیے حال ہی میں مرنے والی خواتین کے عطیہ کردہ یوٹریس سے بچہ پیدا کرنا ممکن ہو جائے گا-واضح رہے کہ اس سے پہلے جو چند یوٹرس ٹرانسپلانٹ کیے گئے ان میں صرف زندہ خواتین ہی اپنا یوٹرس عطیہ کر پاتی تھیں جو کہ انتہائی مشکل پروسیجر ہے جس میں عطیہ کرنے والی خاتون کے لیے پیچیدگیاں پیدا ہو سکتی ہیں-


 

WATCH LIVE NEWS

Samaa News TV PTV News Live Express News Live 92 NEWS HD LIVE Pakistan TV Channels

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.