وزیراعظم عمران خان نے اعتماد کاووٹ حاصل کرلیا،کپتان کوکتنے ووٹ ملے

اسلام آباد(روزنامہ اوصاف)وزیراعظم عمران خان اعتماد کا ووٹ حاصل کرنے میں سرخرو ہو گئے ،ایوان میں موجود 180اراکین  میں سے 178نے وزیراعظم عمران خان پر اپنے مکمل اعتماد کا اظہار کردیا ،فیصل واوڈا اپنے استعفے کے باعث ووٹ نہ ڈال سکے جبکہ سپیکراجلاس کی صدارت کے باعث ووٹ نہیں ڈال سکتے تھے۔تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان کے اعتماد کے ووٹ لینے کے حوالے سے بلایاگیا قومی اسمبلی کا خصوصی اجلاس سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کی زیر صدارت منعقدہوا۔قومی اسمبلی کےاجلاس کا آغاز تلاوت کلام پاک سے کیا گیا جس کے بعد نعت رسول مقبولؐ پڑھی گئی۔نعت رسول مقبولؐ کے بعد قومی ترانہ پڑھا گیا جسے وزیراعظم سمیت تمام اراکین نے کھڑے ہو کر سنا ،ایوان میں180اراکین موجود رہے۔اجلاس میں اپوزیشن کا کوئی رکن شریک نہ ہوا جبکہ حکومتی اراکین کی جانب سے اپوزیشن کے بنچوں پر ’’نوٹوں’’ کے ہار اور ’’نوٹ کو عزت دو‘‘ کے پوسٹرز رکھ دیئے گئے تاہم اسپیکراسد قیصر کی جانب سے عملے کو ہدایت کی گئی کہ اپوزیشن بنچوں سے نوٹوں کےہاراور بینرز اٹھا لئے جائیں جس کے بعد عملے نے اپوزیشن بنچوں سے تمام مواد اٹھا لیا۔جبکہ قبائلی ایم این ایز محسن داوڑ اور جماعت اسلامی کے ایم این اے اکبرچترالی نے اجلاس بھی شریک تھےمراد سعید نے ان کی نشست پر جاکر ان کا خیرمقدم کیا ۔اجلاس شروع ہوتے ہی سپیکر اسد قیصر نے شاہ محمود قریشی کو اعتماد کے ووٹ سے متعلق قرارداد پیش کرنے کو کہا ۔شاہ محمود قریشی نے وزیراعظم پراعتماد سے متعلق قرارداد پیش کی جس میں کہا گیا ہے کہ یہ ایوان آئین کے آرٹیکل91 کی شق سات کے مطابق وزیراعظم عمران خان پرمکمل اعتماد کا اظہار کرتا ہے ۔قرارداد پیش کرنے کے بعد ایوان میں گھنٹیاں بجائی گئیں جس کے بعد اسمبلی ہال کے تمام دروازے بند کردیئے گئے ۔جس کے بعد سپیکر کی جانب سے ووٹنگ کرائی گئی،وزیراعظم کو ووٹ دینے والے اراکین کو دائیں جانب ووٹ ڈالنے کا کہا گیا جبکہ وزیراعظم کےمخالف ووٹ ڈالنے والوں کیلئے بائیں جانب لابی میں انتظام کیا گیا تھا۔اراکین باری باری گئے اور اپنا ووٹ ڈالا ۔جبکہ وزیراعظم عمران خان نے بھی اپنا ووٹ کاسٹ کیا گھنٹیاں بند ہونے کے بعد اراکین واپس اپنی لابی میں آگئے ۔جس کے بعد سپیکر نے گنتی شروع کرنے کی ہدایت کی ۔سپیکر نے نتائج کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم عمران خان کو 178 جبکہ فیصل واوڈااپنے استعفے کے بعد عمران خان کو ووٹ نہ ڈال سکے جبکہ اسد قیصر اجلاس کی صدارت کرنے کے باعث ووٹ نہیں ڈال سکے ۔وزیراعظم کو اعتماد حاصل کرنے کے لئے 172 ارکان کا ووٹ درکار تھا اور وزیراعظم کو 178 ووٹ پڑے ۔


 

WATCH LIVE NEWS

Samaa News TV PTV News Live Express News Live 92 NEWS HD LIVE Pakistan TV Channels

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.

123