سائنس دانوں نے اِنڈیانا جونز کا دعویٰ درست ثابت کردیا

image
ایک نئی تحیقق نے 2008 کی ہالی وڈ فلم اِنڈیانا جونز کے مرکزی کردار انڈیانا جونز کی بچھوؤں کی متعلق تنبیہ کو سچ ثابت کر دیا۔

سائنس دانوں نے فرضی ماہرِ آثارِ قدیمہ کے پروفیسر انڈیانا جونز کے بچھوؤں کی چھوٹی قسم کے زیادہ زہریلے ہونے کے متعلق مؤقف کی تصدیق کر دی۔

این یو آئی گیلوے کے محقیقن نے بچھوؤں کی 36 اقسام کا تجزیہ کیا جس سے ان کو معلوم ہوا کہ سب سے چھوٹی قسم سب سے بڑی قسم کی نسبت 100 گُنا زیادہ زہریلی تھی۔

تحقیق میں محققین کی ٹیم نے یہ جاننا شروع کیا کہ آیا انڈیانا جونز کے دعوے سچ تھے یا بس ایک مووی کا ڈائیلاگ تھا۔

ٹیم نے بچھوؤں کی 36 اقسام کا تجزیہ کیا جس میں دی ڈیتھ اسٹاکر، دی راک اسکارپیئن اور دی بارک اسکارپیئن شامل تھے۔

ان کے تجزیے میں بچھوؤں کی اوسط لمبائی کے ساتھ ان کے زہر کی ممکنہ زہریلے پن کی پیمائش شامل تھی۔

ان کے نتائج نے جونز کے دعووں کی تصدیق کی یعنی جتنا چھوٹا بچھو، اتنا مہلک اس کا زہر۔

برازیلی پیلا بچھو جو بمشکل 2-3 انچز کا ہوتا ہے اس کا زہر 8.3 انچ لمبے دی راک بچھو کے زہر کی نسبت 100 گُنا زیادہ مہلک تھا۔

تاہم، زہریلے ہونے کا تعلق صرف جسم کے سائز سے نہیں تھا، اس کا تعلق ان کے پِنسر سے بھی تھا۔

مزید پڑھیں5 hours agoہوا کے دوش پر ڈیڑھ کلوواٹ بجلی ایک کلومیٹر دور بھیجنے کا ناقابلِ یقین تجربہ

ہم صدیوں سے ہوا کے دوش پر بجلی آگے پہنچانے کی باتیں...

6 hours agoگھر کے اندر ہوا کا ماحول بتانے والی پیلی چڑیا

کنیری ایک چہچہانے والی خوبصورت پیلی چڑیا کو کہتے ہیں جو یورپ...

20 hours agoگوگل پالیسیوں کی وجہ سے ٹروکالر کے اہم فیچر پر پابندی

اینڈروئیڈ فون کی مشہورایپلی کیشن ٹروکالرنے اپنے کال ریکارڈنگ فیچرکوختم کردیا ہے۔...

21 hours agoریئل می کا طاقت ور پروسیسر کے ساتھ کم قیمت فون متعارف

چینی موبائل ساز ادارے ریئل می نے اسنیپ ڈریگن کے طاقت ورچپ...

22 hours agoسی این این کا آئندہ ماہ سے اپنی سروسز بند کرنے کا اعلان

ایک پرانی کہاوت ہے کہ ’ جس کا کام اسی کو ساجھے‘...

1 day agoکوائن بیس نےترکی کے بڑے کرپٹو ایکسچینج کو خرید لیا

دنیا کے بڑے کرپٹوایکسچینج میں سے ایک کوائن بیس نے اپنے آپریشنز...

-->

تازہ ترین نیوز پڑہنے کے لیے ڈاؤن لوڈ کریں بول نیوزایپ

General Rectangle – 300×250

News Source   News Source Text

WATCH LIVE NEWS

مزید خبریں
سائنس اور ٹیکنالوجی
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.