بالی وڈ میں نئی کہانیوں کا فقدان، فلم انڈسٹری کا ری میک پر انحصار

image
انڈیا کی فلم انڈسٹری بالی وڈ پر ہمیشہ سے ہی دیگر انڈسٹریز کی کہانیاں چرانے کا الزام رہتا ہے۔

بالی وڈ کے لیے امریکی فلم انڈسٹری یا پھر جنوبی انڈیا کی فلموں کو نئے انداز میں پیش کرنا معمول کی بات ہے۔

ایسی ہی ایک بالی وڈ فلم ’ہٹ، دی فرسٹ کیس‘ کا جمعرات کو ٹریلر جاری ہوا ہے جو دراصل تیلگو زبان کی فلم کی کاپی ہے۔

ٹریلر میں دیکھا جا سکتا ہے کہ یہ فلم ایک ایسے پولیس افسر کے گرد گھومتی ہے جو خود نفسیاتی مسائل کا شکار ہے اور اسے ایک لڑکی کے اغوا کا کیس سلجھانے کا کہا گیا ہے لیکن دوران تفتیش اس کی اپنی بیوی اغوا ہوجاتی ہے۔

اس سسپنس تھرلر فلم کی کاسٹ میں راجکمار راؤ اور ثانیہ ملہوترا شامل ہیں جبکہ ڈاکٹر سائیلیش کولانو اس فلم کے ہدایت کار ہیں۔

حال ہی میں اکشے کمار کی فلم ’رکشا بندھن‘ کا ٹریلر بھی ریلیز ہوا ہے۔ اس پر بھی الزام لگایا گیا ہے کہ یہ 2018 میں آنے والی پاکستانی فلم ’لوڈ ویڈنگ‘ کی کاپی ہے۔

دیکھا جائے تو ’رکشا بندھن‘ اور ’لوڈ ویڈنگ‘ کی کہانی میں غیر معمولی مماثلت ہے۔ رکشا بندھن کی طرح لوڈ ویڈنگ کی مرکزی کہانی بھی ایک بھائی کے گرد گھومتی ہے جسے بہنوں کی شادی میں مشکلات کا سامنا ہے۔

سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر بھی دونوں فلموں کی کہانی میں مماثلت کا ذکر کیا گیا ہے۔

فلم لوڈ ویڈنگ کے ڈائریکٹر نبیل قریشی نے اپنی ٹویٹ میں رکشا بندھن کا پوسٹر شیئر کرتے ہوئے طنز کیا کہ ’کیا یہ لوڈ ویڈنگ پرو میکس ہے؟ یہ لوڈ ویڈنگ مہنگی والی دیکھنا بھائی۔‘

Load wedding Pro Max ??? Ya load wedding dikhana bhai - thora aur expensive main. https://t.co/CTQl7U44iX

— Nabeel Qureshi (@nabeelqureshi) June 21, 2022

ایک اور ٹوئٹر صارف لکھتے ہیں کہ ’رکشا بندھن کی بنیادی کہانی پاکستانی فلم لوڈ ویڈنگ جیسی ہے۔‘

امریکن جٹ نامی ایک صارف کا کہنا تھا کہ ’بھائی ادھر اکشے کمار نے پاکستانی فلم لوڈ ویڈنگ کی کاپی بنا دی ہے رکشا بندھن۔‘

#RakshaBandha basic plot looks exactly like Pakistani film called " Load wedding " .

— CineHub (@Its_CineHub) June 21, 2022

بالی ووڈ میں ری میک کا سلسلہ کوئی نیا نہیں ہے۔ مسٹر پرفیکٹ عامر خان کی آنے والی فلم ’لال سنگھ چڈھا‘ ہالی ووڈ کی شہرہ آفاق فلم ’فورسٹ گمپ‘ کا ری میک ہے۔

کچھ عرصہ پہلے شاہد کپور کی ریلیز ہونے والی فلم ’جرسی‘ 2019 میں آنے والی تیلگو فلم ’جرسی‘ کا ہی ری میک تھی۔

اور ایسا بھی پہلی مرتبہ نہیں ہوا کہ بالی وڈ نے پاکستانی گانا چوری کیا ہو۔ گزشتہ ہفتے ریلیز ہونے والی انڈین فلم ’جگ جگ جیو' میں پاکستانی گلوکار ابرارالحق کا معروف گانا نچ پنجابن بھی بغیر حقوق اور اجازت کے چلایا گیا ہے۔

I have not sold my song “ Nach Punjaban” to any Indian movie and reserve the rights to go to court to claim damages. Producers like @karanjohar should not use copy songs. This is my 6th song being copied which will not be allowed at all.@DharmaMovies @karanjohar

— Abrar Ul Haq (@AbrarUlHaqPK) May 22, 2022

جس کے بعد ابرارالحق نے ٹوئٹر پر واضح کہا تھا کہ ’میں نے گانا نہیں بیچا ہے، یہ میرا چھٹا گانا ہے جو کاپی کیا گیا ہے۔‘


News Source   News Source Text

مزید خبریں
آرٹ اور انٹرٹینمنٹ
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.