مریم نواز ای سی ایل کیس، لاہور ہائیکورٹ کا کمیٹی کو سات روز میں فیصلہ کرنے کا حکم

لاہور: (9 دسمبر 2019) لاہور ہائیکورٹ نے مریم نواز کا نام ای سی ایل سے نکالنے کی درخواست وفاقی وزارت داخلہ کو بھجوادی۔ عدالت نے وزارت داخلہ کی نظر ثانی کمیٹی کو سات روز میں فیصلہ کرنے کا حکم دیا۔

جسٹس علی باقر نجفی اور جسٹس انوار الحق پنوں کی سربراہی میں دو رکنی بنچ نے مریم نواز کی درخواست پر سماعت کی۔ مریم نواز کے وکیل امجد پرویز نے دلائل دیئے کہ مریم نواز کا نام ای سی ایل میں ڈالنے سے پہلے موقف نہیں سنا گیا۔ ان کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کا فیصلہ ملکی قوانین کے خلاف ہے۔ جس کا موقف سنے بغیر نام ای سی ایل میں ڈالا گیا اسکو عدالتوں نے ریلیف دیا۔ عدالت نے استفسار کیا کہ کیا آپ نے پہلے متعلقہ فورم سے رجوع کیا۔ جس پر امجد پرویز ایڈووکیٹ نے بتایا کہ ہم اس عدالت میں انصاف کے لئے آئے ہیں۔ ایک مخالف جماعت حکومت میں ہے وہ کبھی بھی جانے کی اجازت نہیں دے گی۔ عدالت نے ریمارکس دیئے کہ آپ کس طرح پیشگوئی کر سکتے ہیں کہ حکومت اجازت نہیں دیں گے۔جس پر وکلا نے موقف اختیار کیا کہ شہباز شریف کے معاملے میں یہ ساری چیزیں سامنے آئیں کہ حکومت نے نام نہیں نکالا۔

لاہور ہائیکورٹ نے مریم نواز کےوکلا کے دلائل کے بعد ای سی ایل سے نام نکلوانے کی درخواست وفاقی وزارت داخلہ کی نظر ثانی کمیٹی کو بھجوا دی۔ عدالت نے نظر ثانی کمیٹی کوسات روز میں فیصلہ کرنے کا حکم دیدیا۔ جسٹس علی باقر نجفی نے ریمارکس دیئے کہ ہم چاہتے ہیں ادارے اپنے اپنے کام کریں۔ درخواست کو پینڈنگ رکھ کر حکومت پر پریشر نہیں رکھنا چاہتے۔ دو رکنی بنچ نے مریم نواز کا پاسپورٹ کے حصول کی درخواست پر نیب کو نوٹس جاری کرتے ہوئے سولہ دسمبر کو جواب طلب کر لیا۔


 

WATCH LIVE NEWS

Samaa News TV PTV News Live Express News Live 92 NEWS HD LIVE Pakistan TV Channels

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.