واٹس ایپ پرائیویٹ گروپ کتنے محفوظ ہیں؟

واٹس ایپ میں یہ سہولت موجود ہے کہ آپ ایک لنک شیئر کر کے لوگوں کو اپنے نجی گروپ میں شمولیت کی دعوت دے سکتے ہیں۔ لیکن یہ فیچر گوگل سرچ انجن میں بھی انڈیکس ہو جاتا ہے۔ یوں کوئی بھی انٹرنیٹ پر سرچ کرنے کے بعد مذکورہ لنک حاصل کر سکتا ہے اور آپ کی خواہش نہ ہونے کے باوجود گروپ میں شامل ہو سکتا ہے۔

ڈی ڈبلیو میں ہمارے ایک ساتھی جورڈن ویلڈن نے جمعہ 21 فروری کو اس 'بَگ‘ کی نشاندہی کرتے ہوئے ٹوئیٹ کیا، ''آپ کے واٹس ایپ گروپس شاید اتنے محفوظ نہیں ہیں جتنا آپ سمجھ رہے ہیں۔‘‘

اسرائیلی ’اسپائی ویئر‘: واٹس ایپ اپ ڈیٹ کر لیں

'ریورس انجینیئرنگ ایپس‘ میں مہارت رکھنے والے ویلڈن اور جین مانچن وانگ اس بات پر بھی متفق ہیں کہ گوگل ایسے لنکس کو تبھی اپنے انڈیکس میں شامل کرتا ہے جب گروپ کا کوئی رکن اسے آن لائن شیئر کرے۔ لیکن ویب لنک میں معمولی ترمیم کر کے ایسے گروپس میں شمولیت بھی ممکن ہے جو گوگل پر موجود نہ ہوں۔

فیس بُک معاملے سے باخبر

واٹس ایپ کی مالک کمپنی فیس بُک اس معاملے سے نومبر 2019 سے آگاہ ہے، تب ایک صارف کی جانب سے فیس بُک کو مطلع کیے جانے کے بعد کمپنی نے اس صارف کو ایک جواب بھی لکھا تھا۔

12 نومبر کو دیے گئے اس جواب میں فیس بُک نے گوگل پر واٹس ایپ گروپس کے لنک موجود ہونے پر حیرت کا اظہار کرتے ہوئے لکھا تھا کہ کمپنی 'گوگل اور دیگر سرچ انجنز کو مکمل طور پر کنٹرول نہیں کر سکتی‘۔

مستقبل میں میسجنگ مزید محفوظ بنائی جائے گی، زکربرگ

ڈی ڈبلیو کی فیس بُک ایڈیٹر صوفیہ ڈیوگو کا اس ضمن میں کہنا تھا، ''یہ حقیقت کہ فیس بُک گزشتہ برس نومبر سے اس معاملے سے آگاہ ہے اور اس کے باوجود اس فیچر کو ختم نہیں کیا گیا، پھر سے یہ ظاہر کرتی ہے کہ فیس بُک ہمیشہ کی طرح اب بھی اپنی مصنوعات کو عام فہم بنانے کو پرائیویسی پر ترجیح دیتی ہے۔‘‘

ش ح / ا ب ا (جورڈن ویلڈن)

ویڈیو دیکھیے 02:44 اسمارٹ فون کا زیادہ استعمال نقصان دہ ؟

بھیجیے Facebook Twitter google+ Whatsapp Tumblr Digg stumble reddit Newsvine

پیرما لنک https://p.dw.com/p/2vjO2

اسمارٹ فون کا زیادہ استعمال نقصان دہ ؟


 

WATCH LIVE NEWS

Samaa News TV PTV News Live Express News Live 92 NEWS HD LIVE Pakistan TV Channels

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.