پاک سر زمین پارٹی نے بھٹو کے شہر لاڑکانہ میں سیاسی میدان سجا دیا

پاک  سر زمین پارٹی کے چیرمین مصطفٰی کمال نے لاڑکانہ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سندھ کارڈ استعمال کرنے والو توبہ کرو، سندھ کے کوئی ٹکڑے نہیں کر سکتا ہے۔

تفصیلات کے مطابق پی ایس پی چیئرمین سید مصطفی کمال نے کہا کہ جب تک میں اور پی ایس پی زندہ ہیں سندھ تقسیم نہیں ہو گا۔

پی ایس پی نیشنل و سندھ کونسل اجلاس میں پاک سر زمین پارٹی کے صدر انیس قائمخانی، صوبائی صدر شبیر قائمخانی، ڈویژنل صدر بشیر میرانی اور دیگر مرد و خواتین رہنما و کارکنان نے شرکت کی۔

چیئرمین سید مصطفی کمال نے خطاب میں کہا کہ بلوچستان، کے پی کے ایک ایک بھائی کے پاس جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ جنہوں نے میرے قافلے میں شمولیت اختیار کی ان کا مشکور ہوں اور میں سندھ اور لاڑکانہ کے ساتھیوں کو کامیابی پر مبارکباد دیتا ہوں۔

مصطفی کمال نے کہا کہ کراچی کی ایک گلی تقسیم نہیں کر سکتے اور سندھ توڑنے کی بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مہاجر تقسیم نہیں چاہتا، میں مہاجر ہوں ایک ہو کر رہنا چاہتا ہوں ۔

پاک  سر زمین پارٹی کے چیرمین نے کہا کہ آج سندھ ایک ہو گیا ہے اور میں اس بات پر سب کو مبارک باد دیتا ہوں اور مجھے خوشی ہے کہ میں  سندھ کا بیٹا ہوں۔

یادرہے کہ اس سے قبل یہ ہی بات مصطفی کمال نے حیدرآباد لطیف آباد جلسہ میں بھی کئی تھی۔

مصطفی کمال نے کہا کہ ریاست مدینہ کا نام لینے والوں، دعوے کرنے والوں، آؤ میں تمہیں بتاتا ہوں کہ ریاست مدینہ کے بانی حضرت محمد مصطفی صلی اللہ علیہ وسلم کی دو باتیں شائد تمہیں ہوش آ جائے۔

انہوں نے فرمایا اللہ تعالی کو اپنی مخلوق سے بہت محبت ہے اتنی محبت کے بدکار عورت کو پیاسے کتے کو پانی پلانے پر معاف کر دیا تھا۔

دوسری جانب متقی پرہیزگار خاتون کو بلی باندھنے اور 3 دن کھانا نا دینے پر جہنم بھیج دیا تھا۔

انہوں نے کہا کہ اللہ اپنی پیدا کردہ مخلوق سے بہت پیار کرتا ہےلہزا ریاست مدینہ بنانے کا دعوی کرنے والو خیال کرو کیونکہ پاکستان کے بچے پیاسے ہیں اور صاف پانی تک سے محروم ہیں۔

چیئرمین سید مصطفی کمال نے کہا کہ تمہارا کام جھوٹ پر چل رہا ہے، تنبیہی کرتا ہوں کہ ریاست مدینہ کی جھوٹی بات مت کرو کیونکہ جھوٹی بات کرنے والوں کو اللہ جہنم میں ڈالے گا۔

لاڑکانہ سے خطاب کرتے ہوئے مصطفی کمال نے کہا کہ پاکستان کے لوگو میرا ساتھ دو میں تمہارے دروازوں پر تمہارے قدموں میں حکمرانی لاؤں گا ۔

انہوں نے کہا کہ مجھے ووٹ دو میں آئین میں ایک دن میں ترمیم کروں گا۔

مصطفی کمال نے آئین کے حوالے سے خطاب میں بات کرتے ہوئے بتایا کہ آئین کے آرٹیکل 148 کو چار لائنیں لکھ کر چھوڑ دیا گیا ہے اورہر وزیر اعلی آئین کے اس آرٹیکل کی اپنی مرضی کی تشریح کرتا ہے۔

واضح رہے کہ جو لوگ الیکشن کے بعد سمجھتے تھے کہ پی ایس پی ختم ہوگئی وہ دیکھ لیں آج لاڑکانہ کی عوام بھی ہمارے ساتھ ہے لاڑکانہ کی عوام نے جلسے میں بھرپور شرکت کر کے اس بات کو ثابت کر دیا ہے۔


 

WATCH LIVE NEWS

Samaa News TV PTV News Live Express News Live 92 NEWS HD LIVE Pakistan TV Channels

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.