چمن: پاک افغان سرحد کی 3 ہفتوں سے بندش، تجارت اور پیدل آمدورفت معطل

image

چمن میں پاک افغان بارڈر کو افغانستان کی جانب سے بند ہوئے 3 ہفتے گزر چکے ہیں جس کی وجہ سے پاکستان اور افغانستان کے درمیان تجارت اور پیدل آمدورفت بھی معطل ہے۔

چمن میں پاک افغان سرحد کی بندش کے خلاف تاجروں کا احتجاج جاری ہے۔ پیر 25 اکتوبر کو انجمن تاجران اورمختلف سیاسی پارٹیوں کی جانب سے چمن کوئٹہ شاہراہ کو بطور احتجاج بند کردیا گیا۔ کوژک ٹاپ کے مقام پر رکاوٹیں موجود ہیں اور ٹریفک کی روانی معطل ہے۔

انجمن تاجران اور سیاسی پارٹیوں کا مطالبہ ہے کہ چمن بارڈر کو دوبارہ کھولنے کے لئے افغان حکام سے بات چیت کریں تاکہ سرحد کی بندش کی وجہ سے عوام کو درپیش مشکلات ختم ہوسکیں۔

چمن پاک افغان بارڈر کی بندش کے خلاف کوژک ٹاپ شاہراہ کی بندش کی وجہ سے مال بردار ٹرکوں اور مسافروں گاڑیوں کی طویل قطاریں لگی ہوئی ہیں جس کی وجہ سے مسافروں کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔

تاجروں اور مختلف سیاسی پارٹیوں کے رہنماؤں کا مطالبہ ہے کہ پاک افغان سرحد کودوبارہ کھولنےکے لئے افغان حکام سے مذاکرات کئے جائیں اور سرحد پر دونوں ممالک کے درمیان درپیش مسائل کوبات چیت سے حل کریں تا کہ تجارت اور پیدل آمدورفت بحال ہوسکے ۔


News Source   News Source Text

WATCH LIVE NEWS

مزید خبریں
تازہ ترین خبریں
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.