راولپنڈی ٹیسٹ: دوسرا دن بارش اور کم روشنی کی نظر ہوگیا

پاکستان اور سری لنکا کے درمیان جاری دو ٹیسٹ میچزکی سیریز کے پہلے ٹیسٹ  میچ کا دوسرا روز بارش اور کم روشنی کی نظر ہوگیا۔

تفصیلات کے مطابق سری لنکا نے 202 رنز پانچ کھلاڑی آؤٹ پر دوسرے دن کےکھیل کا آغاز کیا تو  پہلے بارش اور پھر کم روشنی کے باعث کھیل کو دو مرتبہ روکنا پڑا جس کے بعد کھیل مزید  ممکن نہ ہوا۔

دوسرے روز صرف 18.2کا کھیل ممکن ہو سکا  جس میں پاکستان کو واحد کامیابی نیروشن ڈک ویلا کی صورت میں ملی جو شاہین شاہ آفریدی دوسرا شکار بنے۔

دوسرے روز  سری لنکا نے اپنے گذشتہ اسکور میں باسٹھ رنز کا اضافہ کیا۔

واضح رہے کہ پہلے دن کا اختتام  بھی خراب روشنی کے باعث مقررہ وقت سے قبل کرنا پڑا  تھا جبکہ 21.5اوورز کا کھیل باقی تھا۔

اس سے قبل سری لنکا نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا اور 96 رنز  کی اوپننگ پارٹنرشپ سے اسے درست بھی ثابت کیا ۔

تاہم دوسرے سیشن میں پاکستانی بالرز نے کم بیک کرتے ہوئے یکے بعد دیگرے 4وکٹیں حاصل کرکے سری لنکا کو مشکل میں ڈال دیا۔

پاکستان ،سری لنکا ٹیسٹ: راولپنڈی کے لیے نیا ٹریفک پلان جاریآخری سیشن میں سابق کپتان  اینجیلو میتھیوز بھی اپنی وکٹ گنوا بیٹھے  اور پہلے دن کے اختتام  تک سری لنکا نے 68.1اوورزمیں پانچ وکٹوں کے نقصان پر 202 رنز بنالیے ہیں۔

سری لنکا کی جانب سے کپتان کرونارتنے نے 59،اوشادا فرنینڈو نے 40 اور اینجیلو میتھیوز نے 31 رنز بنائے۔اس کے علاوہ مینڈس 10 جبکہ دنیش چندیمل صرف 2 رنز ہی بناسکے۔

یاد رہے کہ ایک دہائی بعد ٹیم میں شامل کیے جانے والے بلے باز فواد عالم کو حتمی الیون میں شام نہیں کیا گیابلکہ آسٹریلیا سیریز میں ناکام ہونے والے حارث سہیل کو ایک اور موقع دیا گیا ہے۔

دوسری جانب  عابد علی اور عثمان شنواری  نے ٹیسٹ ڈیبیو کیا ہے۔اس موقع پر قومی ٹیم کے ہیڈ کوچ مصباح الحق نے عابد علی اور بولنگ کوچ وقار یونس نے عثمان شنواری کو ٹیسٹ کیپ پہنائی۔

یاد رہے کہ پاکستان کے تمام 11 پاکستانی کھلاڑی سری لنکا کے خلاف ہوم گراؤنڈ پر پہلا ٹیسٹ کھیل رہے ہیں۔

پی سی بی  کی جانب سے شائقین کی تعداد بڑھانے کے لیے کچھ اسٹینڈز میں انٹری فری کردی  گئی ہے۔


 

WATCH LIVE NEWS

Samaa News TV PTV News Live Express News Live 92 NEWS HD LIVE Pakistan TV Channels

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.