پابندی کے بعد ڈرامہ ’جلن‘ کیسے نشر ہوا؟

گزشتہ دنوں مقبول ترین ڈرامہ جلن پر گزشتہ ہفتے پیمرا کی جانب سے پابندی عائد کردی گئی تھی تاہم سندھ ہائی کورٹ نے ڈرامہ کو دوبارہ نشر کرنے کی اجازت دے دی۔

اے آر وائی ڈیجیٹل کی انتظامیہ نے سماء ڈیجیٹل کو بتایا کہ ہم نے سندھ ہائی کورٹ میں پٹیشن دائر کی تھی تاہم انہوں نے ڈرامے کو نشر کرنے کی اجازت دے دی ۔

پابندی کے حوالے سے پیمرا نے ایک نوٹیفیکیشن جاری کیا تھا جس کے مطابق ڈرامہ جلن کے اسکرپٹ کے حوالے سے عوام کی طرف سے شکایات موصول ہوئی تھیں، جبکہ چینل انتظامیہ کو کئی بار کہا گیا تھا کہ ڈرامے کے مواد کا جائزہ لیں اور اس کے اسکرپٹ کو پاکستانی معاشرے کے مطابق بنائیں، اگر ایسا نہ ہوا تو چینل اور ڈرامہ کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔

پیمرا کی بار بار وارننگ پر بھی اسکرپٹ میں کوئی تبدیلی نہیں کی گئی جس کے نتیجے میں پیمرا آرڈیننس کے سیکشن 27 کے تحت ڈرامہ سیریل جلن کے نشر کرنے پر پابندی عائد کردی تھی۔

دوسری جانب فلم نقاد عمیر علوی نے سماء ڈیجیٹل سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ ڈرامہ جلن پر پابندی عائد کرنے کے حوالے سے پیمرا کے آرڈر کو سندھ ہائی کورٹ کی جانب سے معطل کردیا گیا ہے جس کے بعد ڈرامہ کی 14 ویں قسط معمول کے مطابق نشر کی گئی۔

عمیر علوی نے بتایا کہ ایسا ہونا ہی تھا کیونکہ پیمرا ریگولیٹ کرتی ہے وہ ڈرامے پر پابندی نہیں لگاسکتی ۔

ڈرامہ جلن کی کاسٹ میں اداکارہ منال خان، اریبہ حبیب اور عماد عرفانی سمیت دیگر اداکار شامل ہیں ۔

یاد رہے کہ رواں برس جون میں جلن ڈرامے کا ٹیزر سامنے آنے کے بعد ڈرامے کے آغاز سے قبل ہی اسے تنقید کا نشانہ بنایا گیا تھا اور لوگ ڈرامے کی کہانی کو پاکستانی سماجی روایات کے خلاف قرار دے رہے تھے۔

واضح رہے کہ چند روز قبل پیمرا کی طرف سے پیمرانے اے آر وائی کے ڈرامہ سیریل عشقیہ اور ہم ٹی وی کے ڈرامہ سیریل پیار کے صدقے میں سماجی اور مذہبی اقدار کے منافی مواد نشر کرنے پر کاروائی کرتے ہوئے پیمرا آرڈیننس کے سیکشن 27 کے تحت دونوں ڈراموں کی نشر مکرر پر پابندی عائد کر دی تھی۔


 

WATCH LIVE NEWS

Samaa News TV PTV News Live Express News Live 92 NEWS HD LIVE Pakistan TV Channels

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.

259