’ایلیئن حیاتیات ہمارے اسپیس کرافٹس اور دنیا کو آلودہ کرسکتے ہیں‘، سائنسدانوں کا انتباہ

image

ایک نئےمقالے میں سائنسدانوں نے کہا ہے کہ خلاء میں بڑھتی ہوئی تحقیقات ایلیئن حیاتیات(آرگنزم) کےزمین پرآنے اور زمینی حیاتیات دیگر سیاروں پر جانے کے امکانات کو پڑھا رہی ہے۔

بائیو سائنس جرنل میں شائع ہونے والے مقالے کے مطابق محققین نے انسانوں کے اِس ریکارڈ کی جانب اشارہ کیا جس کے مطابق جب وہ دنیا میں کسی نئی جگہ جاتا ہے تو ان کے ساتھ جانے والے آرگنزم مقامیوں پر حملہ آور ہوجاتے ہیں اور انہیں نقصان پہنچاتے ہیں۔

محققین کا کہنا ہے کہ ایسا ہی کسی دوسرے سیارے کی زندگی کے ساتھ بھی ہوسکتا ہے جسے دنیاکے بیکٹیریا یا دنیا کو ان سیاروں کے بیکٹیریا آلودہ کرسکتے ہیں۔

مقالےکے سربراہ مصنف انٹنی ریکیارڈی کا کہنا تھا کہ ہماری دنیا سے آگے زندگی کی تلاش ایک بہت دلچسپ کام ہے جو مستقبل قریب میں بہت بڑی دریافتیں کرسکتا ہے۔ تاہم بڑھتے اسپیس مشنز کے پیشِ نظر یہ بات ضرور ہے کہ دونوں جانب سے بائیولوجیکل آلودگی کے خطرے کو کم کیا جائے۔

ریکیارڈی کا کہنا تھا کہ سب سے زیادہ ممکنہ زندگی مائیکروبائل کی صورت ہوسکتی ہے جو ممکنہ طور پر بیکٹیریا کے مشابہ ہو۔

Square Adsence 300X250


News Source   News Source Text

WATCH LIVE NEWS

مزید خبریں
سائنس اور ٹیکنالوجی
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.