نئی پاکستانی فلم کاپوسٹربالی ووڈ پوسٹرکی نقالی نکلا

image

بھارت کی شوبزانڈسٹری تو اکثروبیشترہی پاکستانی پراجیکٹس سے آئیڈیاز مستعار لیتی ہے، کبھی گانے کی نقالی سامنے آتی ہے تو کبھی دھن چرالی جاتی ہے اوراکثرتواپنے ڈراموں میں پورے پورے مناظرکاپی کرلیتے ہیں لیکن اس بار معاملہ تھوڑا مختلف ہے۔

نئی آنے والی پاکستانی فلم ’’رشتے‘‘ کا پوسٹر کم و بیش مقبول ترین بالی ووڈ فلم کبھی خوشی کبھی غم کے پوسٹرجیسا ہے ۔

A post shared by DIVA Magazine Pakistan (@divamagazinepakistan)

دلچسپ بات اس پوسٹرکی نقالی پرآنے والاردعمل ہے جس میں کاپی رائٹ ایکٹ کا شعوررکھنے والے بیشترافراد نے اس اقدام کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ دوسروں کی محنت کا کریڈٹ اس طرح سے کیسے لیا جاسکتا ہے، کئی عقلمندوں نے مشورہ دیا کہ اور کچھ نہیں تو کم ازکم نقالی سے پہلے اداکاروں کے پہنے گئے کپڑوں کا رنگ ہی تبدیل کرلیتے۔

لیکن بیشتر ‘محب وطن’ ایسے بھی ہیں جنہوں نے اس عمل کو جائزقراردیتے ہوئے کہا ہے کہ بھارت پاکستان انٹرٹینمنٹ انڈسٹری سے اتنی “چوریاں’ کرتا ہے، اگریہاں سے بھی ایک پوسٹر کاپی کرلیا گیا تو کیا ہوا۔

صارفین نے اپنے تبصروں میں بھارت کی تازہ ترین چوری کی نشاندہی کرتےہوئے کہا کہ جب حدیقہ کیانی کا پورا گانا چرایا جاسکتا ہے اور کریڈٹ بھی نہیں دیاجاتا تو پھریہ بھی ٹھیک ہے۔

کئی ایک نے یہ دکھڑابھی رویا کہ پھرپاکستانی فلمساز ہم سے توقع رکھتے ہیں کہ مارول سیریز کے بجائے ان کی فلمیں دیکھیں۔

فلم کا ٹریلر20 اپریل کو ریلیزکیا گیا تھا جس کے ساتھ دی گئی تفصیلات کے مطابق رشتے کو سال کی سب سے بڑی تفریحی فلم قراردیتے ہوئے بتایا گیا ہے کہ یہ محبت، خاندان، دوستی اور بھائی چارے کی ایک دلچسپ کہانی ہے جو تین نسلوں پرمحیط ہے۔

View this post on Instagram A post shared by Galaxy Lollywood (@galaxylollywood)

فلم کی مرکزی کاسٹ میں شاہد حمید، صائمہ سلیم، نوازخان، عبداللہ خان، جمال یوسف، اریج چوہدری، اور ثانیہ شوکت شامل ہیں۔

این ایس پروڈکشنزکی اس فلم کے ڈائریکٹر ملک ایم نوازخان ہیں، فلم 13 مئی کو سینما گھروں میں پیش کی جارہی ہے۔


News Source   News Source Text

مزید خبریں
آرٹ اور انٹرٹینمنٹ
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.