مہنگائی اور بے روزگاری کے خلاف ملک گیر احتجاج کی کال

image

امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کمرتوڑ مہنگائی، بے روزگاری کے خلاف ملک گیر احتجاج کی کال دے دی

تفصیلات کے مطابق امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ حکمران اپنا قبلہ درست کریں یا گھر جائیں۔

امیر جماعت اسلامی نے کہا کہ حکومت کی عوام دشمن پالیسوں کے خلاف جمعہ کو ملک بھرمیں مظاہر ے ہوں گے، عوا م سے اپیل کرتا ہوں جماعت اسلامی کے پرامن احتجاج کا حصہ بنیں۔

سراج الحق نے یہ بھی کہا کہ ملکی معیشت مکمل تباہی کے دہانے پر پہنچ چکی ہے، حکومت کے ظالمانہ اقدامات کے خلاف احتجاج میں مزیدشدت لائیں گے۔

امیر جماعت اسلامی کا کہنا تھا کہ حکومت نے عوام کے سروں پر پچاس ہزار ارب قرضے کا پہاڑ لاد دیا اور اب حکومت گیس کی قیمتوں میں بھی تیس سے چالیس فیصد اضافہ کرنے جارہی ہے۔

  سراج الحق کا یہ بھی کہنا تھا کہ ادویات کی قیمتوں میں تین برسوں میں تیرہ بار اضافہ ہوا جبکہ  شیائےخور دونوش کی قیمتیں سو سے تین سو فیصد بڑھیں اور پٹرول کی قیمت میں آدھی سے زیادہ لیوی شامل ہے۔

امیر جماعت اسلامی سراج الحق کا مزید کہنا تھا کہ لوگ اپنے حق کے لیے گھروں سے نکلیں، ناہل حکمرانوں کو مسترد کردیں اور قوم اسلامی فلاحی پاکستان کے لیے جماعت اسلامی کا ساتھ دے۔

واضح رہے اس سے قبل امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا تھا کہ اقتصادی ترقی کے حکومتی دعوؤں کا زمینی حقائق سے کوئی تعلق نہیں۔

امیر جماعت اسلامی نے کہا  تھا کہ عوام کی اکثریت غربت، مہنگائی کی چکی میں پس رہی ہے، وزیراعظم نے ایک کروڑ نوکریاں دینے کا وعدہ کیا،لاکھوں برسرروزگار بھی بے روزگار کر دیئے۔

سراج الحق کا یہ بھی کہنا تھا کہ افغانستان میں اسلامی قوتوں کی فتح سے سب سے زیادہ تکلیف بھارت کو ہوئی، اقوام متحدہ اور عالمی طاقتیں افغانستان کی تعمیر نو کے لیے طالبان سے تعاون کریں۔ اللہ سے امید ہے افغانستان امن اور ترقی کا گہوارہ ہو گا۔

امیر جماعت اسلامی سراج الحق کا مزید کہنا تھا کہ جماعت اسلامی پاکستان میں اسلامی نظام کے نفاذ کے لیے جدوجہد کر رہی ہے۔ جماعت اسلامی پرامن جمہوری جدوجہد پر یقین رکھتی ہے، ملک میں ترقی اور خوشحالی لانے کے لیے جماعت اسلامی کا ساتھ دے۔

Adsence 300X250


News Source   News Source Text

WATCH LIVE NEWS

مزید خبریں
پاکستان کی خبریں
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.