سندھ ہائیکورٹ میں آوارہ کتوں کومارنےکی رپورٹ پیش

image

سندھ ہائی کورٹ میں صوبائی حکومت نےآوارہ کتوں کو مارنےکی رپورٹ پیش کردی۔

ہائیکورٹ میں پیش کی گئی رپورٹ کےمطابق صوبے میں 25ہزار آوارہ کتوں کو مارا گیا، سب سےزیادہ 11 ہزار 344، کراچی میں 3 ہزار 864، لاڑکانہ میں ایک ہزار 757، شہید بےنظیر آباد میں 2 ہزار 591، میرپورخاص میں 2 ہزار 45 کتوں کو تلف کیا گیا جبکہ آوارہ کتوں سے متعلق ہیلپ لائن 1093 فعال کردی گئی ہے۔

عدالت نے صوبائی حکومت کو حکم دیا کہ چھوٹے علاقوں میں سانپ کےکاٹنےکی ویکسین کی فراہمی کی جائے۔

گزشتہ سماعت پر سندھ ہائیکورٹ نے آوارہ کتوں کی ویکسینیشن کی جامع رپورٹ پیش کرنے اور ان سے متعلق ہیلپ لائن 1093 بحال کرنے کا حکم دے دیا تھا۔

ہائیکورٹ میں آوارہ کتوں کی بہتات اور ویکسینز کی عدم فراہمی سے متعلق کیس کی سماعت کےدوران سرکاری وکيل نے بتايا کہ آوارہ کتوں کی ويکسینيشن سے متعلق قانون سازی ہورہی ہے۔ عدالت نے استفسار کيا کہ قانون کی منظوری کا نوٹيفکيشن کب جاری ہوگا، کتے انسانوں کو کاٹ رہے ہيں لیکن اس پرکارروائی کيوں نہيں ہورہی ہے۔

جسٹس محمد علی مظہر نے آبزرويشن دی کہ ترک ماڈل تو يہی ہے کہ ويکسینيشن کرکے ٹيگنگ کی جائے،آپ لوگ ٹيگ کيوں نہيں لگاتے؟۔ عدالت نے سی بی سی کو شکايات نوٹ کرکے فوری کارروائی کرنے کی ہدايت کی تھی۔


News Source   News Source Text

WATCH LIVE NEWS

مزید خبریں
پاکستان کی خبریں
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.