اسپیس ایکس نے اسٹار لنک سے متعلق ایک اور سنگِ میل عبور کر لیا

image

اسپیس ایکس نے اسٹار لنک کا دو ہزارواں سیٹلائیٹ خلاء میں بھیج کر اپنے انٹرنیٹ سیٹلائیٹس کے جھرمٹ کے منصوبے کی جانب ایک اور سنگِ میل عبور کر لیا۔

اسپیس ایکس نے مزید 49 اسٹار لنک سیٹلائیٹس فلوریڈا کے کینیڈی اسپیس سینٹر سے فیلکن 9 راکٹ پر روانہ کیے۔

میز کے سائز کے برابر سیٹلائیٹس کو خلاء میں بھیجنے کے ایک گھنٹہ 20 منٹ بعد اسپیس ایکس نے ٹوئٹر پر تصدیق کی۔

فروری 2018 میں دو سیٹلائیٹ خلاء میں بھیجنے کے بعد اب تک اسپیس ایکس 2042 اسٹار لنک سیٹلائیٹس مدار میں تعینات کر چکا ہے۔ اگرچہ ان میں سے کئی فیل ہوئے یا واپس بلا لیے گئے۔

اسٹار لنک ایک سیٹلائیٹس کا جھرمٹ ہے جس کا مقصد دنیا زیادہ تر حصے میں انٹرنیٹ کی فراہمی ہے بالخصوص ان دیہی علاقوں میں جہاں یہ انٹرنیٹ کی سہولت میسر نہیں ہے۔

اپنی بیِٹا سروس کے حصے کے طور اسٹار لنکپہلے ہی 23 مملک، بشمول برطانیہ، میں دستیاب ہے۔

تاہم، ایلون مسک پُر امید ہیں کہ اسٹار لنک جھرمٹ کی اگلی جنریشن میں 42 ہزار اسٹار لنک سیٹلائیٹس زمین کے نچلے مدار میں تیر رہے ہوں گے۔

منگل کو ہونے والی لانچ اسٹار لنک کی سال کی تیسری لانچ تھی۔ اس سے قبل 6 جنوری کو اسٹار لنک کے سیٹلائیٹس اور 13 جنوری کو تیسرا ٹرانسپورٹر راکٹ خلاء میں بھیجا گیا تھا۔

اسپیس ایکس نے فیلکن 9 کا پہلی اسٹیج کا بوسٹر کامیابی کے ساتھ بحر اوقیانوس میں لانچ کے 10 منٹ بعد اسپیس ایکس کے ڈرون شپ پر لینڈ کرایا۔

Square Adsence 300X250


News Source   News Source Text

WATCH LIVE NEWS

مزید خبریں
سائنس اور ٹیکنالوجی
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.